یہ دونوں فوٹوز ھماری قوم کے لئے اور مسلم دنیا کے لئے بہت اھم ھیں۔ یہ ھمارے مستقبل اور ھمارے دشمنوں کے ارادوں کی تصویر کشی کرتی ھیں۔ ان فوٹوز پر بعد میں بات کرتے ھیں پہلے ایک ضروری بات۔۔۔ ھم قران و حدیث کی باتوں کو قصے کہانیاں سمجھتے ھیں ھمیں صرف انگریزی کتابوں کے حوالے والی یا بھاری بھرکم نام والے گورے مصنفین کی باتیں زیادہ سچی اور حقیقی لگتی ھیں۔ خیر۔
یہ فوٹوز بہت اھم ھیں۔۔۔۔
اس میں اوپر والی فوٹو ایک مشہور عالم امریکی میگزین فلاڈیفیا ٹرمپٹ کی ھے جو چرچ آف گاڈ کے زیرانتظام ھر ماہ کروڑوں کی تعداد میں شائع ھوتا ھے اور مفت تقسیم کیا جاتا ھے۔ تصویر میں نظر آنے والا شمارہ اگست 2001 یعنی 9/11 سے ایک ماہ پہلے شائع ھوا۔ اس کے الفاظ فوٹو میں بھی نظر آ رھے ھیں میں انگریزی حوالوں کے شوقین دوستوں کے لئے یہاں بھی لکھ دیتا ھوں۔
Most people think the crusades are a thing of the past—over forever. But they are wrong. Preparations are being made for a final crusade, and it will be the bloodiest of all....
بہت سے لوگ سوچتے ھیں کہ صلیبی جنگیں ماضی کا قصہ ھیں۔۔۔۔لیکن وہ غلط سوچتے ھیں ۔۔۔ ایک آخری صلیبی جنگ کی تیاریاں جاری ھیں اور یہ سب صلیبی جنگوں میں سے زیادہ خونریز ھونگی۔۔۔۔۔
ٹھیک ایک ماہ بعد 9/11 ھوجاتا ھے۔۔۔۔ امریکی صدر جو انتہائی ذمہ دار ٹھنڈے زھن کا شخص ھوتا ھے صلیبی جنگ کا اعلان کرکے اس میگزین کے پیغام کی تصدیق کر دیتا ھے تاکہ دنیا کے طول و عرض میں رھنے والے صلیبی جنگ والے زھنی طور پر تیار ھوجائیں۔۔۔۔ اور پھر صلیبی جنگ شروع کر دی جاتی ھے۔ اس صلیبی جنگ کا آغاز افغانستان کا انتخاب کیوں کیا گیا؟؟؟۔
اس کا جواب اس سے نیچے والی فوٹو میں ھے۔ یہ تاریخ کے عظیم ترین فلسفی آرنلڈ جوزف ٹائن بی۔ Arnold J. Toynbee کی مشہور کتاب سولائزیشن آن ٹرائل کی تصویر ھے۔ اس کتاب میں ٹائن بی سنہ ء 1950 میں لکھتا ھے کہ " اکیسویں صدی میں جنگ کمیونزم اور کیپیٹل ازم کے دوران نہیں ھوگی کیونکہ اکیسویں صدی میں کمیونزم میں جان نہیں رھے گی۔ اکیسویں صدی کی سب سے بڑی جنگ اسلام اور عیسائیت کے درمیان ھوگی۔ یاد رھے کہ اس زمانے میں کمیونزم کو بھی کسی قسم کا خطرہ نہیں تھا۔اور نہ ھی اسلام اور عیسائیت کی جنگ کے دور دور تک کوئی شبہات تک نہیں تھے۔ دوسری جگہ وہ لکھتا ھے کہ " دنیا میں اصلی اسلامی تہذیب کا سرچشمہ افغانستان میں ھے یہیں سے اسلام اپنے پاؤں پر کھڑا ھوگا۔۔۔ یہی بات حدیث شریف میں ھے لیکن چونکہ قران و حدیث کی باتیں کچھ دوستوں کی سمجھ میں نہیں آتی۔ اس لئے انگریزی حوالوں سے بات کرتا ھوں۔۔۔ ٹائن بی کی تمام باتیں سو فیصد سچ ثابت ھو رھی ھیں۔ آج بھی افغانستان میں صلیبی جنگ کے ذریعے اسلام کو کمزور کرنے کی ناکام کوششیں عروج پر ھیں۔ تین طاقتیں اس وقت اس مشن پر افغانستان میں سرگرم عمل ھیں۔ ایک بہت عجیب بات ھے کہ پاکستان اور افغانستان کو ملبے کا ڈھیر بنانے والے زلزلے بھی دو بار افغانستان کے نیچے سے پیدا ھوچکے ھیں۔۔۔۔
آخر میں ایک اور بات ، اگر اس بات سے بھی آپ " ان " کے ارادوں کو نہیں پہچان پاتے تو پھر ھم سب کا اللہ ہی حافظ۔۔۔
سنہ 1967 کی چھ روزہ عرب اسرائیل جنگ میں اسرائیل نے مصر ، شام اور اردن کو شکست دے کر ان کے وسیع علاقوں پر قبضہ کر لیا۔ یہودیوں نے اس فتح کا شاندار جشن منایا۔ اس موقع پر بن گوریان نے تقریر کرتے ھوئے کہا " ھمیں عرب ممالک سے کوئی خطرہ نہیں۔ خطـــــــــــــرہ صـــــــــــــرف پاکســـــــــــــــــــــتان سے ہے"۔۔۔
Labels:
Reactions: 

Enter your email address:

Delivered by FeedBurner

Live Match Score

فیس بک پر تلاش کریں

مفت اکاؤنٹ کھولیں

Jobs Career in photography today!

Jobs Career in photography today!
Click on ads and grab your job.

گوگل پلس followers

گوگل پلس followers