1) واھلہ
یہ حضرت نوح علیہ سلام کی بیوی تھی۔ اسکو ایک نبی برحق کی بیوی ھونے کا شرف حاصل تھا اور برسوں تک یہ ایک سچے نبی کی صحبت سے سرفراز ھوتی رھی مگر اسکی بدنصیب قابل عبرت ھے کہ اسکو ایمان نصیب نھیں ھوا۔ بلکہ یہ نوح علیہ سلام کی دشمنی توھین اور بے ادبی کی وجہ سے ایمان سے دور ھوتی ھوی بالاحر جہنم کی ایندھن بن گی۔ اس نے ھمشہ نوح علیہ سلام کے حلاف پروگینڈے کیے کہ نوح علیہ سلام ایک مجنون اور پاگل انسان ھے۔(نعوذباللہ)

2)واعلہ
یہ حضرت لوط علیہ سلام کی بیوی تھی، یہ بھی اللہ کے جلیل القدر پیغمبر سے برسوں صحبت کا فیض حاصل کرتی رھی مگر ایمان سے سرفراز نھی ھوی۔ جب قوم لوط علیہ سلام پر پتھروں کا غذاب آیا اور لوط علیہ سلام اپنے ساتھیوں کو لیکر بستی سے جانے لگے تو آپ نے سب کو فرمایا کہ بستی کی طرف پیچھے نہ دیکھیں۔
لیکن واعلہ چونکہ منافق تھی اس لیے اسنے پیچھا دیکھا اور منہ سے یہ الفاظ "یاقوماہ" ھاے رے میری قوم نکلتے ھی ایک پتھر انکو لگا اور واعلہ وھی ھلاک ھوکر جہنم رسید ھوی۔

3) آسیہ ۔
آسیہ بنت مزاحم رضی اللہ تعالی عنہ فرعون کی بیوی تھی، لیکن جب انھوں نے فرعون کے جادوگروں کو موسیٰ علیہ سلام سے شکست کھاتے ھوے دیکھا تو آسیہ بھی ایمان لے آی، فرعون کو جب یہ حبر ھوی تو اس کافر نے آسیہ رضی اللہ تعالہ عنہ کو بھت تکالیف دیے اور اسکو بھت زدوکوف کیا، ان کے ھاتھوں پیروں میں کیل ٹھوک دیے، عرض طرح طرح کے مصایب سے فرعون نے آسیہ رضی اللہ تعالی عنہ کو ایمان سے ھٹانے کی کوشیش کی گی۔

4) مریم۔
مریم بنت عمران رضی اللہ تعالی عنہ حضرت عسیٰ عیلہ سلام کی والدہ ھے، عیسیٰ علیہ بغیر باپ کے انکے شکم سے مغجزاتی طور پر پیدا ھوا۔ انکی قوم نے مریم بنت عمران رضی اللہ تعالی عنہ پر کافی لعن طعن کی مگر یہ صابرہ رھی ان تمام پر ۔۔۔اور اللہ نے اس صبر کے بدلے قرآن میں انکے درجات کا زکر کیا ھے۔ صرف نیکوں کی اولاد ھونا کافی نھی یا صرف نیکوں کی بیوی بہن بیٹی بھای باپ بننا کافی ھے۔ یاد رکھیں نجات صرف نیک اعمال پر ھے
"بحوالہ عجایب القرآن"
Labels:
Reactions: 

Enter your email address:

Delivered by FeedBurner

Live Match Score

فیس بک پر تلاش کریں

مفت اکاؤنٹ کھولیں

Jobs Career in photography today!

Jobs Career in photography today!
Click on ads and grab your job.

گوگل پلس followers

گوگل پلس followers