انٹرنیٹ کمپنی گُوگل نے یورپی عدالت برائے انصاف کے ایک فیصلے پر عملدرآمد شروع کر دیا ہے جس کے تحت اسے اپنے یورپی صارفین کو یہ حق دینا ہو گا کہ وہ خود کو ’بھلا دینے‘ کی درخواست کر سکیں۔
گُوگل نے اس عدالتی فیصلے پر جمعرات سے عمل درآمد کا آغاز کر دیا ہے۔ گزشتہ دِنوں سامنے آنے والے یورپی عدالت برائے انصاف کے فیصلے کے مطابق یورپی شہریوں کو یہ حق حاصل ہے کہ وہ انٹرنیٹ پر کی گئی سرچ میں اپنی معلومات سے متعلق لِنکس کو ختم کرنے کی درخواست کر سکیں۔ تفصیل سے پڑھیے

یہ درخواست مخصوص حالات میں دی جا سکتی ہے، مثلاﹰ معلومات غیر مؤثر ہو جانے پر یا غلط ہونے پر۔ یورپی عدالت کے حالیہ فیصلے پر عمل پیرا ہونے کے لیے، گُوگل نے یورپی شہریوں کے لیے ایک ویب فارم کی سہولت دی ہے جس کے تحت وہ اس سرچ انجن سے اپنے متعلق نتائج ختم کرنے کی درخواست کر سکتے ہیں۔
اس ویب فارم کو استعمال کرنے والے کو اپنی شناخت ظاہر کرنی ہو گی اور یہ بھی بتانا ہو گا کہ وہ کون سے لِنکس ڈیلیٹ کروانا چاہتے ہیں اور کیوں۔
گُوگل کے سابق سربراہ ایرک شمٹ
ان لوگوں کو اپنی شناخت ثابت کرنے کے لیے تصویر والے شناختی کارڈ یا ڈرائیونگ لائسنس کی ڈیجیٹل کاپی بھی فراہم کرنی ہو گی۔
گُوگل کے ایک ترجمان نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو ایک ای میل پیغام میں بتایا: ’’عدالتی فیصلے کے تحت گُوگل کو کسی فرد کے بھلا دیے جانے اور عوام کے جاننے کے حق کے حوالے سے مشکل فیصلے کرنے ہوں گے۔‘‘
معلومات کے حصول کی آزادی اور انٹرنیٹ پر جھوٹ اور ماضی کی باتوں سے محفوظ رہنے کے لیے لوگوں کے حق کے درمیان ایک توازن قائم کرنے کے لیے گُوگل نے ایک مشاورتی کمیٹی بھی بنائی ہے۔
اس کمیٹی میں گُوگل کے سابق سربراہ ایرک شمٹ، وِکی پیڈیا کے بانی جمی ویلز، آکسفورڈ انٹرنیٹ انسٹی ٹیوٹ میں اخلاقیات کے پروفیسر لوسیانو فلوریڈی، لیووین یونیورسٹی کے لاء اسکول کی ڈائریکٹر پیگی والکے، ہسپانوی ڈیٹا پراٹیکشن ایجنسی کے سابق ڈائریکٹر خوسے لوئیس پِنار اور اقوام متحدہ کے مندوب برائے آزادئ اظہار فرانک لا روئے شامل ہیں۔
اس حوالے سے فلوریڈی نے ایک تحریری بیان میں کہا ہے: ’’میں گُوگل کی جانب سے قائم کی گئی مشاورتی کمیٹی میں شمولیت پر بہت خوش ہوں جو انٹرنیٹ کی وجہ سے درپیش اخلاقی اور قانونی چیلنجز کا جائزہ لے گی۔‘‘
انہوں نے مزید کہا: ’’یہ بہت ہی پرجوش اقدام ہے جس کے لیے شاید کسی حد تک مشکل بلکہ فلسفیانہ سوچ درکار ہے۔‘‘
Labels:
Reactions: 

Enter your email address:

Delivered by FeedBurner

Live Match Score

فیس بک پر تلاش کریں

مفت اکاؤنٹ کھولیں

Jobs Career in photography today!

Jobs Career in photography today!
Click on ads and grab your job.

گوگل پلس followers

گوگل پلس followers