ایک ایسے دور میں جب سپر ہیرو موویز تاریکی اور خوف کے جال میں بہت زیادہ الجھتی جا رہی ہیں، امیزنگ اسپائیڈرمین 2 میں یہ تازگی کا احساس لئے یہ بات نوٹ کرنے والی ہے کہ اس میں نہ تو شہروں کی تباہی و بربادی دکھائی گئی ہے، نہ ہی ولن کی جانب سے دنیا پر قبضے کی کوئی سازش اور نہ ہی کیپٹن امریکہ - ونٹر سولجر کی طرح 9/11 کے واقعات کا رخ دکھانے کی کوشش کی گئی ہے- اور یہ اس کے باوجود کہ فلم ویب سلینگر کے آبائی شہر نیویارک ہی میں سیٹ کی گئی ہے۔
ڈائریکٹر مارک ویب (500 ڈیز آف سمر)، 2012 میں آنے والے اس فلم کے پہلے حصے میں بھی دکھا چکے ہیں کہ ان کے پاس ایسے نوجوان کرداروں کی کردار سازی کی خصوصی صلاحیت ہے جو کہ زندگی کے دوراہے پر کھڑے ہوں اور اس کا مظاہرہ انہوں نے اس فلم میں بھی کیا ہے۔ تفصیل سے پڑھیے
اس سیکوئل میں پرفارمنسز خاصی تگڑی ہیں- اینڈریو گارفیلڈ، بڑے دل والے پیٹر پارکر (اسپائڈرمین) کے کردار میں خوب جچے ہیں جو کہ اس مشکل سے دوچار ہے کہ کیسے گوین اسٹیسی (ایما اسٹون) کے والد کی آخری خواہش کے مطابق اسٹیسی کی حفاظت کی خاطر خود کو اس سے دور رکھ سکیں- دوسری جانب، ایما اسٹون نے بھی ایک ایسی مضبوط اور پراعتماد لڑکی کا کردار ادا کرتے ہوئے شاندار پرفارمنس کا مظاہرہ کیا ہے جو اپنے سپرہیرو بوائے فرینڈ کے مقابلے میں بیک سیٹ لینے کو تیار نہیں اور اینڈریو گارفیلڈ کے ساتھ ایسی کیسمٹری قائم کی ہے جو کہ فلم میں موجود رومانس کو چار چاند لگاتی ہے۔
اور جب امیزنگ اسپائیڈرمین 2 ایکشن اور رومانس میں مشغول نہیں تو وہ اپنے دیکھنے والوں کو اپنے پراسرار سب پلاٹ میں جکڑے رکھتا ہے جہاں پیٹر پارکر اپنے والدین کی موت کی گتھی سلجھانے کی کوشش کرتا ہے۔
امیر و کبیر وارث، ہیری اوسبورن کے کردار میں ڈین ڈیہان بھی شاندار رہے جو کہ ایک مرتا نوجوان شخص ہے جو زندہ رہنے کے لئے کچھ کرنے کو تیار ہے- وہ آخر کار اسپائڈرمین کے ازلی دشمن، دی گرین گوبلیٹ میں تبدیل ہو جاتا ہے- گارفیلڈ اور ڈیہان کی کیسمٹری اچھی ہے خاص طور پر جب دونوں کے درمیان اس جاندار سین میں ڈائیلاگز کا تبادلہ ہوتا ہے جب دونوں پرانی دوستی کو دوبارہ جوڑنے کی کوشش کرتے ہیں جو کہ اس غصے کی وجہ سے دوبارہ سلگ اٹھتی ہے کہ ان دونوں کے والدین نے انہیں تنہا چھوڑ دیا۔
دونوں مرکزی کرداروں کی کریکٹرائیزیشن خاصی حقیقی ہوئی ہے اور اس کا سہرا عجیب نوجوان لڑکوں کا کردار نبھاتی حقیقی پرفارمنسز کو جاتا ہے- شاید یہی وجہ ہے کہ فلم کے مرکزی ولن، میکس ڈلن جو کہ الیکٹرو (جیمی فوکس) بن جاتا ہے اتنا مایوس کن لگا۔
میکس ڈیلن کے روپ میں جو اپنی طرز کا انوکھا تنہائی پسند اور اعتماد کے سنگین مسائل کا شکار کردار ہے، جیمی فوکس کی پرفارمنس بس واجبی رہی- جیمی فوکس کی پرفارمنس اتنی خراب رہی ہے کہ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ انہوں نے صرف پیسے کیلئے یہ فلم سائن کی تھی۔ بہرحال کچھ بہتری اس موقع پر نظر آتی ہے جب میکس ایک لیبارٹری میں ہونے والے ایک حادثے کے نتیجے میں ایک انتہائی طاقتور ولن یعنی الیکٹرو میں تبدیل ہو جاتا ہے اور وہ بھی شاید اس لئے کہ وہ بلآخر خاموش ہو جاتا ہے۔
امیزنگ اسپائیڈرمین 2 کا فضائی ایکشن خاصا اچھا ہے جس میں فلم کے وہ مناظر شامل ہیں جن میں نیویارک کے ٹریفک اور اس کی اونچی اونچی عمارتوں کے درمیان نہایت برق رفتاری سے جھولتا اور تیزی سے بڑھتا ہوا اسپائڈرمین برے لوگوں کو پکڑتا ہے- فلم کی کمپیوٹر گرافک امیجری بھی اتنی ہی متاثرکن ہے اور الیکٹرو کی جانب سے بجلی کڑکڑانے اور بجلی پر کنٹرول کے مناظر اسے سلور اسکرین پر تھری ڈی میں ایک شاہکار بنا دیتے ہیں۔
ایک ایسے شخص کے طور پر جو اسپائیڈرمین کامک بکس اور کارٹون شو دیکھتے ہوئے بڑا ہوا، مجھے یہ کہنا پڑے گا کہ یہ خود اسپائڈرمین کی سب سے بہترین عکاسی ہے- ماسک چڑھا کر، اینڈریو گارفیلڈ مزیدار ایک لائن کے جملے اتنی ہی تیزی سے بولتے نظر آئے ہیں جس تیزی سے وہ ویب پھینکتے ہیں اور اپنے دشمنوں کو اپنے حیران کن کرتبوں سے پریشان کرتے ہوئے وہ انہیں اپنی ٹریڈ مارک سپرہیومن پھرتی سے شکست دیتے نظر آئے ہیں اور ویسے بھی اسپائڈرمین لوگوں کا سچا ہیرو ہے جو کہ اپنے ہیروازم اور مزاحیہ رویے دونوں سے ان کا دل جیتتا ہے۔
امیزنگ اسپائیڈرمین 2 کو اس بات کا بھی کریڈٹ جاتا ہے کہ اس نے تینوں ولنز کو نہایت احتیاط سے ڈیفائن کئے گئے اسکرین پلے کے ذریعے آپس میں جگّل کیا- اپنے بڑے سائز کے باوجود، مکینیکل وحشی رائنو (پال گیاماتی) کا فلم میں چھوٹا کردار ہے- یہ اچھی خبر ہی ہے کیونکہ فلم میں اس بات کے مضبوط اشارے دیے گئے ہیں کہ امیزنگ اسپائیڈرمین ٹریلوجی کی آخری قسط میں سنسٹر سکس کی آمد ہوگی۔
حالانکہ امیزنگ اسپائیڈرمین 2 چند طویل مناظر اور ایک آدھ پکے مرکزی ولن کی وجہ سے ٹاپ پر نہ پہنچ سکی پھر بھی اس میں اتنا کرنٹ بہرحال موجود ہے جو اسے آپ کی توجہ حاصل کرنے کا مستحق بناتا ہے۔

Labels: ,
Reactions: 

Enter your email address:

Delivered by FeedBurner

Live Match Score

فیس بک پر تلاش کریں

مفت اکاؤنٹ کھولیں

Jobs Career in photography today!

Jobs Career in photography today!
Click on ads and grab your job.

گوگل پلس followers

گوگل پلس followers