کنیڈا سے تربیت مکمل کرنے کے بعد وطن واپس لوٹے تو کسی اہم کام کی تکمیل کے لئے انہیں خصوصی طور پر لاہور بھیجا گیا۔ ان کے پاس بے حد خفیہ دستاویزات تھیں جو انہیں لاہور ہیڈکوارٹر پہنچانی تھیں۔     تفصیل سے پڑھیے
فوجی ٹرک میں وہ اپنے ساتھیوں کے ساتھ جب مریدکے پہنچے تو ٹرک کو حادثہ پیش آ گیا۔ ٹرک بلکل تباہ ہو گیا۔ عزیز بھٹی کو بے حد خطرناک چوٹیں آئیں۔ ان کی ریڑھ کی ہڈی فریکچر ہو گئی۔گردن کا ایک مہرہ مضروب ہوا جس کے باعث گردن کا گھومنا تو ایک طرف گردن حرکت کرنے کے قابل بھی نہ رہی۔ نیم بے ہوشی کے عالم میں وہ اپنے ایک ساتھی کے ساتھ لاہور جانے والی پرائیویٹ بس میں سوار ہوئے اور سب سے پہلا فقرہ جو ان کی زبان سے ادا ہوا وہ یہ تھا۔
“کاغذات تو محفوظ ہیں نا؟“
“یس سر“ ساتھی نے جواب دیا اور رمی تھیلہ اپنے سینے کے ساتھ بندھا پا کران کا دل مطمئن ہو گیا۔
اس جان لیوا حادثے کے باوجود وہ اپنے فرض سے غافل نہ ہوئے۔ لاہور کے آرمی ہاسپٹل میں ڈاکٹر ان کے علاج کے دوران حیران تھے کہ اتنے خوفناک حادثے کے بعد میجر صاحب زندہ کیسے رہے۔میجر صاحب نے بے ہوشی کی دوا لینے سے پہلے خفیہ دستاویزات اعلٰی فوجی حکام کے سپرد کر کے اپنا فرض پورا کیا۔ پھر علاج کے لئے آمادگی ظاہر کی۔
ان کی ادائیگی فرض کے لئے اس قدر مضبوط قوت ارادی نے ان کو تین ماہ بعد ہی تمام ضربوں اور زخموں سے صحت یاب کر دیا اور اپنے پیروں پر چل کر ہاسپٹل سے رخصت ہوئے۔
سادگی پسند، مطالعے کے شوقین، سادہ لباس کے رسیا، صوم و صلوۃ کے پابند میجر صاحب نہ سگریٹ پیتے تھے نہ پان کھاتے تھے۔ سینما بینی کرتے اور نہ کوئی اور فضول مشغلہ پال رکھا تھا۔سردیوں میں نماز پڑھنے جاتے تو عام لوگوں کی طرح گرم چادر یا کمبل جسم پر لپیٹ لیتے۔ ان کے اخلاق اور بندہ پروری سے سب ہی متاثر تھے۔
اپنی محنت شاقہ، بے پناہ خوبیوں اور بہترین صلاحیتوں کے باعث ہی ان کو اپنی بٹالین کا افسر اعلٰی چنا گیا۔ ان کے دوست ان سے محبت کرتے تھے تو اساتذہ ان پر فخر کرتے تھے۔ ماضی اور حال کے فوجی جرنیلوں کے حالات و واقعات کا مطالعہ کرنا ان کی سب سے بڑی دلچسپی تھی جسے وہ ہر صورتِ حال میں اختیار کئے رہے۔
میجر صاحب کی شخصیت کا ایک پہلو ایمانداری تھا جس پر وہ کبھی کوئی سجھوتہ نہ کرتے تھے۔ دورانِ تربیت ایک مرتبہ ان کے کلاس انچارج نے پوری کلاس سے سبق یاد کر کے لانے کو کہا۔دوسرے دن جب پہلے ہی لڑکے سے سوال کیا گیا تو پتہ چلا ہ اسے سبق یاد ہے مگر وہ ہوم ورک کر کے نہیں لایا۔
Labels: ,
Reactions: 

Enter your email address:

Delivered by FeedBurner

Live Match Score

فیس بک پر تلاش کریں

مفت اکاؤنٹ کھولیں

Jobs Career in photography today!

Jobs Career in photography today!
Click on ads and grab your job.

گوگل پلس followers

گوگل پلس followers