اس شہر کےلوگ مجھےدیوانہ اور پاگل سمجھتےہیں ۔ میں جانتا ہوں بہت جلد یہ سب مجھےعبرت کا نشان بنا دیں گے۔میرےاس جسم کو کبھی نہ ٹوٹ سکنےوالی بیڑیوں سےجکڑ کر ،میری روح کو ازلی اندھیروں میں دھکیل میں دیں گے۔میں جانتا ہوں اب یہی سب میرا مقدر ہےکہ میرےجرائم کی فہرست بہت طویل ہے۔ میں نےاس شہر کےلوگوں کو ہیجان میں مبتلا کیا ہے۔ میں نےبادشاہِ وقت کو سینکڑوں مصاحبوں کےسامنےبیچ شہر پُکارا ہےکہ جس نےتخت نشینی کےوقت نعمتوں کی فراوانی کا وعدہ کیا تھا۔ مجھےسزا تو ملنی ہی چاہیےکہ میں نےلاکھوں لشکریوں کی ہمراہی میں چلتےکوتوالِ شہر کا راستہ روک کر اپنےزخموں سےچور جسم ، اپنےمعصوم ساتھیوں کی لاشوں کا جواز مانگا ہےکہ جس نےامن کا وعدہ کرتےسمےاپنی سنہری چمکتی تلوار کو ہماراےسامنےلہرایا تھا۔ مجھےسولی پر ضرور لٹکایا جائےگا میں نےشہر کی سب سےبڑی عدالت میں ہزاروں علما کی موجودگی میں قاضی القضاہ سےاپنےجلتےشہر کا حساب مانگا ہےکہ جس نےاپنےہاتھوں پر بوسےکےوقت انصاف کا نغمہ گنگنایاتھا۔ یقینا یہ سب جرم ہےلیکن میرےکچھ جرائم اس سےبھی بڑھ کر سنگین ہیں ۔ کیا وہ میں نہیں تھا جس نےشاہ کی رسمِ تاجپوشی پہ گھر کی منڈیروں پر اپنےلہو کےچراغ روشن کئےتھی۔ کیا میرا یہ جرم قابلِ معافی ہوسکتا ہےکہ میں نےاپنےسپاہیوں کو دیوتائوں کی سی طاقت والا لکھا تھا؟ اور میرا وہ جرم کون بھلا سکتا ہےجب میں دیوانہ وار انصاف کےترانےلکھتا تھا ،گلیوں بازاروں میں قاضی کی عظمت کےقصیدےگاتا تھا۔ میرےیہ گناہ بہت عظیم ہیں ۔ میں جانتا ہوں یہ سب اب مجھےزندہ نہ چھوڑیں گے۔ ان کی جھوٹی عظمت ، طاقت اور سچائی کےگن گانےوالےکو جو سزا دی جائےکم ہے۔ اس شہر کےلوگ بھی سچےہیں ۔۔۔ایسےپاگل ، جنونی آواراہ سےجتنی نفرت کی جائےکم ہے۔
Labels:
Reactions: 

Enter your email address:

Delivered by FeedBurner

Live Match Score

فیس بک پر تلاش کریں

مفت اکاؤنٹ کھولیں

Jobs Career in photography today!

Jobs Career in photography today!
Click on ads and grab your job.

گوگل پلس followers

گوگل پلس followers